ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر منہاس الدین نے چترال میں انسداد پولیو مہم کا آغاز کردیا ؛مہم12سے 15فروری تک جاری رہے گی

چترال(نذیرحسین شاہ)ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر چترال منہاس الدین نے وویمن چلڈرن ہسپتال چترال میں ایک بچی کو پولیوڈراپ پلاکر چترال میں پولیومہم کا آغاز کردیا جو کہ تین روز تک جاری رہے گا۔ اس سلسلے میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں علاقے کی پسماندگی کے باوجود چترال ضلعے کو پولیو سے پاک رکھنے میں محکمہ صحت کی کارکردگی کو سراہا اوراس مہلک وخوفناک مرض سے نئی نسل کو بچانے کی کوششوں میں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے ہر ممکن تعاؤن کا یقین دلایا۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ اس راہ میں وسائل کی کمی کو آڑے آنے نہیں دیا جائے گا جس کے لئے ڈسٹرکٹ ایڈ منسٹریشن کوئی کسر نہیں اٹھائے گی۔منہاس الدین نے کہاکہ پولیو کے قطروں کی اہمیت و افادیت سے آگاہی مہم کے ذریعے پولیوکے خاتمے میں مددمل سکتی ہے ،پولیو ایک موذی مرض ہے پولیو کاخاتمہ ہمارے معاشرے کی اجتماعی ذمہ داری ہے، صحت کے شعبہ میں دور حاضر کا سب سے بڑا چیلنج ہے انسداد پولیو مہم کی خود نگرانی کرونگا ۔انہوں نے کہا کہ ہم پولیوکے خاتمہ کے لیے پر عزم ہیں متعلقہ حکام پانچ سال تک عمر کے ہر بچے کو پولیو ویکسین کے قطرے پلواناہرصورت یقینی بنائیں اور اس ضمن میں تمام سرکاری محکمے ہرقسم کا تعاون فراہم کرنے کے پابند ہیں ۔ انہوں نے زور دیکر کہا کہ تمام والدین اپنے بچوں کو معذوری سے بچانے کے لیے اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے ضرور پلوائیں شہری 12 فروری تا 15 فروری 4 روزہ پولیومہم کوکامیاب بنانے میں اپنا کردار ادا کریں ۔ ای پی آئی کے کوارڈینٹر ڈاکٹر فیاض رومی نے بتایا کہ پانچ سال سے کم عمر کے بارہ بچوں کی تعداد 68080ہزارہے جن تک پہنچنے کے لئے ایک مربوط حکمت عملی ترتیب دی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ضلعے کے چوبیس یونین کونسلوں میں پولیو کے قطرے پلائے جائینگے اور ضلع بھر میں 1تا5سال تک کے بچوں کوپولیو کے قطرے پلانے کے لیے محکمہ صحت کے اہلکاران کے ساتھ تعاون کویقینی بناکراہم قومی فریضہ ادا کریں ضلع بھر میں4روزہ پولیومہم کاآغاز 12فروری تا 15فروری 4 روز جاری رہے گا۔اس حوالہ سے محکمہ صحت نے ٹیمیں تشکیل دے کران کی ڈیویٹاں لگادی ہیں شہری پولیومہم کے عملہ سے بھرپورتعاون کرتے ہوئے1سال تا5سال تک کے بچوں کوپولیوکے قطرے پلوائیں تاکہ وہ معذوری سے بچ سکیں شہری ادارہ صحت کے تعاون سے ہسپتالوں، سکولوں،اڈوں کے علاوہ اہم پبلک مقامات پرپانچ سال سے کم عمرکے بچوں کوپولیوکے قطرے پلواکرانسدادپولیومہم کاحصہ بنیں۔انہوں نے کہاکہ برفباری اور شدید موسمی حالات کی وجہ سے اس مہم میں بروغل وادی یوسی یارخون، گبورویلی یوسی گرم چشمہ اورپستی یوسی کوہ کو شامل نہیں کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس سہ روزہ مہم کے بعد پولیو ڈراپ سے محروم رہنے والے بچوں کے لئے ایک روزہ کیچ اپ مہم بھی چلائی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ محکمہ صحت پولیو کے خاتمے کے لیے کوشاں ہے اوراس مقصدکے لیے ورکردن رات چارروزہ انسدادپولیو مہم میں مصروف عمل رہیں گے اوراپنی ڈیوٹی احسن طریقے سے سرانجام دینگے جس سے بہت جلدخطہ پولیوسے پاک قرارپائے گا ۔اس موقع پرچلڈرن اسپشلیسٹ ڈاکٹرگلزاراحمد،پی ای او،ڈبلیوایچ اوکے اسٹاف بھی موجودتھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں